Categories
LATEST

بارش اور عید الاضحٰی کے بعد صفائی نہ ہونے سے شہر کی تباہی میں مزید اضافہ ہوا ہے۔ آصف حسنین کراچی بھر میں تعفن سے شہری سخت اذیت میں مبتلا ہیں. صدر کراچی ڈویژن پاک سر زمین پارٹی

بارش اور عید الاضحٰی کے بعد صفائی نہ ہونے سے شہر کی تباہی میں مزید اضافہ ہوا ہے۔ آصف حسنین کراچی بھر میں تعفن سے شہری سخت اذیت میں مبتلا ہیں. صدر کراچی ڈویژن پاک سر زمین پارٹی

بارش اور عید الاضحٰی کے بعد صفائی نہ ہونے سے شہر کی تباہی میں مزید اضافہ ہوا ہے۔ آصف حسنین
کراچی بھر میں تعفن سے شہری سخت اذیت میں مبتلا ہیں. صدر کراچی ڈویژن پاک سر زمین پارٹی
سندھ حکومت اور شہری انتظامیہ اپنی بنیادی ذمہ داریاں انجام دے کر عوام کو ریلیف دینے کے بجائے عوامی مسائل پر سیاست کر رہی ہیں
سندھ حکومت اور شہری انتظامیہ عوام کو ریلیف دینے کے بجائے اپنی نااہلی کا ملبہ ایک دوسرے پر ڈال رہی ہیں
حکمرانوں کو اپنی جیبیں گرم کرنے کے علاوہ کوئی کام نہیں نہ عوامی مسائل کے حل میں کسی قسم کی کوئی دلچسپی ہے۔
شہر میں جگہ جگہ گندگی اور غلاظت کے ڈھیروں سے بیماریوں کے پھوٹنے کا خدشہ ہے
شہر میں جراثیم کش اسپرے اور بیشتر مقامات پر اب تک چونے کا چھڑکاؤ بھی نہیں کیا گیا ہے.
عید الاضحٰی کی کارکردگی کے بعد نام نہاد عوامی نمائندوں کو خود مستعفی ہو جانا چاہیے
عوام کی جانب سے موجودہ حکمرانوں کو زمنی الیکشن میں مسلسل مسترد کیا جا رہا ہے
اقتدار کی لالچ میں نام نہاد عوامی نمائندے عوامی طاقت کو نظر انداز کر کے بیٹھے ہوئے ہیں.
تباہ حال کراچی کے لئے ریلیف پیکج کا اعلان کریں. وزیراعظم پاکستان سے مطالبہ
اس آفت زدہ شہر جو کہ پاکستان کا معاشی حب ہے اس میں ہنگامی بنیادوں پر صفائی کو یقینی بنایا جائے

(پ ر) پاک سر زمین پارٹی کے کراچی ڈویژن کے صدر آصف حسنین نے پاکستان ہاؤس سے جاری اپنے بیان میں کہا ہے کہ بارش اور عید الاضحٰی کے بعد صفائی نہ ہونے سے شہر کی تباہی میں اضافہ ہوا ہے. عید الاضحٰی کے بعد شہر بھر میں جگہ جگہ گندگی اور غلاظت کے ڈھیر جمع ہیں جن کے تعفن سے شہری سخت اذیت میں مبتلا ہیں لیکن سندھ حکومت اور شہری انتظامیہ اپنی بنیادی ذمہ داریاں انجام دے کر عوام کو ریلیف دینے کے بجائے عوامی مسائل پر سیاست کر رہی ہیں اور اپنی نااہلی کا ملبہ ایک دوسرے پر ڈال رہی ہیں. انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کو اپنی جیبیں گرم کرنے کے علاوہ کوئی کام نہیں نہ عوامی مسائل کے حل میں کسی قسم کی کوئی دلچسپی ہے. انہوں نے کہا کہ شہر میں جگہ جگہ گندگی اور غلاظت کے ڈھیروں سے بیماریوں کے پھوٹنے کا خدشہ ہے جبکہ شہر میں جراثیم کش ادویات کا اسپرے اور بیشتر مقامات پر اب تک چونے کا چھڑکاؤ بھی نہیں کیا گیا ہے. انہوں نے کہا کہ عید الاضحٰی کی کارکردگی کے بعد نام نہاد عوامی نمائندوں کو خود مستعفی ہو جانا چاہیے جبکہ عوام کی جانب سے بھی موجودہ حکمرانوں کو زمنی انتخابات میں مسلسل مسترد کیا جا رہا ہے لیکن اقتدار کی لالچ میں نام نہاد عوامی نمائندے عوامی طاقت کو نظر انداز کر کے بیٹھے ہوئے ہیں. انہوں نے کہا کہ عوام کو شہری انتظامیہ اور صوبائی حکومت سے کوئی امید باقی نہیں رہی ہے اس لیے وزیراعظم پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ تباہ حال کراچی کے لئے ریلیف پیکج کا اعلان کریں اور اس آفت زدہ شہر جو کہ پاکستان کا معاشی حب ہے اس میں ہنگامی بنیادوں پر صفائی کو یقینی بنائیں کیونکہ کراچی میں عوامی مسائل سنگین حد تک بڑھ چکے ہیں.